Totay Khawab - ٹوٹے خواب


اے دل  اے دل 
خواب تمہارے  ٹوٹے ایسے 
ٹوٹا ہو  شیشہ  جیسے 

جوڑے کیسے ٹوٹے رشتے 
ہوگا  کیسے 
پوچھے  مجھ  سے  
روتے  روتے 
یہ دل  یہ دل 

پل میں جوڑا  پل میں توڑا
کیسا  بندھن 
کیسے  رشتے 
کیسے  وعدے 
ٹوٹے  تمہارے 
اے دل  اے دل

جیوں  کیسے  مروں   کیسے 
کوئی آس دلا دے 
پھر سے پریت لگا دے 
سجدہ  سجدہ  
مانگے  رب سے 
دھڑکن  دھڑکن 
یہ دل  یہ دل

Post a Comment

Popular posts from this blog

A look at the extremist mindset of Pakistan (The Maya Khan incident)

Outcasts - The Ahmadis of Pakistan

Feelings of an Ahmadi enduring endless Persecution

First job at MTA Pakistan

Rohan - Part 2

3 Days to Remember (The Last Jalsa Salana in Rabwah)

Rohan - Part 1

My Mother - Amtul Hafeez Begum

کچھ تلخ باتیں

Somber Eid