Yadain - یادیں


جب تجھ سے دور میں ہوتا ہوں 
تیری یاد بہت  ہی آتی ہے 
تیری یاد چھائوں بن جاتی ہے 
تب سفر آساں ہوجاتا ہے

تھے پانا خواب سا لگتا تھا 
تجھے پاکر کھویا رہتا ہوں 
میرا  وجود تھا بکھرا بکھرا سا
تیرے ساتھ وہ پورا ہوتا ہے

میرے دل کے ہر دروازے پر
دستک صرف تمہاری ہے 
تیرے بن میں کھو سا جاتا ہوں 
ہر سو ویرانی لگتی ہے 


وہ شام عجب نرالی تھی
جب تم سے مل کر بیٹھے تھے 
میرے ہونٹ بھی سل سل جاتے تھے 
تیرے لب بھی کچھ کچھ کہتے تھے 
وہ شام پھر آنے والی ہے 
اس آس پہ جیتا رہتا ہوں 


Post a Comment

Popular posts from this blog

A look at the extremist mindset of Pakistan (The Maya Khan incident)

Outcasts - The Ahmadis of Pakistan

Feelings of an Ahmadi enduring endless Persecution

First job at MTA Pakistan

3 Days to Remember (The Last Jalsa Salana in Rabwah)

My Mother - Amtul Hafeez Begum

Rohan - Part 2

کچھ تلخ باتیں

Rohan - Part 1

Somber Eid